پاکستان میں مالیاتی شمولیت کو بڑھانے کیلئے کودا ٹیکنالوجیز کیجانب سے کام کا آغاز

05565c2c-16e2-4650-94eb-32154832838f-e1652951294957.jpg

سیدرسول بیٹنی

اسلام آباد: مالیاتی خدمات آفر کرنے والی کمپنی "کودا ٹینکالوجیز”  نے فاطمہ گروپ اور سٹی سکولز گروپ کے اشتراک سے پاکستان میں مالیاتی شمولیت کو آگے بڑھانے کے لیے ایک معاہدے پر دستخط کئے ہیں، ابھرتی ہوئی مارکیٹوں پر مرکوز مالی خدمات کی برطانوی کمپنی کودا ٹیکنالوجیز نے پاکستان میں مالیاتی شمولیت کو آگے بڑھانے کے مقصد کے ساتھ ڈیجیٹل بینکنگ لائسنس کے لئے درخواست دینے کے لئے فاطمہ گروپ اور دی سٹی سکولز گروپ کے ساتھ شراکت داری کی ہے۔

کودا ٹیکنالوجیز 2019 میں قائم کی گئی جس نے معروف ادارہ جاتی سرمایہ کاروں بشمول ویلار وینچرز اور ٹارگٹ گلوبل سے 90 ملین ڈالر سے زائد کی فنڈنگ حاصل کی اور اپنے ملکیتی بنیادی بینکنگ پلیٹ فارم کی طاقت پر صرف نائیجیریا میں 3 ملین سے زیادہ صارفین تک رسائی حاصل کی جو ڈیٹا کی بنیاد پر فوری کریڈٹ کی فراہمی کے طریقہ کار ، ٹچ فری کسٹمر آن بورڈنگ اور سستی اور جامع مالی خدمات فراہم کرنے کے مشن پر مبنی ہے۔

کودا ٹیکنالوجیز اپنے ریٹیل کسٹمر سیگمنٹ میں گزشتہ 6 مہینوں میں 10 ارب ڈالر مالیت کے لین دین پر عملدرآمد کے بعد اب پورے افریقہ میں چھوٹے اور درمیانے درجے کے کاروباروں کو سستی اور صارف دوست مالیاتی خدمات تک یکساں رسائی فراہم کرنے کا ارادہ رکھتی ہے جبکہ یہ 2022 کے آخر تک سات نئی منڈیوں میں رسائی کیلئے کوشاں ہے۔

کودا کے گروپ چیف ایکسپنشن آفیسر ریان لابشر کے مطابق فاطمہ گروپ اور دی سٹی سکولز گروپ کے ساتھ کمپنی کی شراکت داری ہر پارٹنر کی منفرد رسائی اور صلاحیتوں سے فائدہ اٹھاتی ہے تاکہ خاص طور پر زراعت اور تعلیم کے شعبوں پر توجہ کے ساتھ پاکستان میں مالیاتی رسائی اور استطاعت کو بڑھانے کی زبردست صلاحیت کے ساتھ ایک تجویز تیار کی جا سکے۔

فاطمہ گروپ پاکستان کا سب سے بڑا زرعی کاروباری گروپ ہے جس کے 2.5 ملین صارفین ہیں اور اس کے زرعی فنانسنگ پائلٹس نے فصلوں کی پیداوار بڑھانے میں کسانوں کی مدد کرنے میں کامیابیاں ریکارڈ کی ہیں۔ اس گروپ نے فاطمہ گوبی وینچرز میں بھی سرمایہ کاری کی ہے جو کہ ٹیکنالوجی کے آغاز میں ایک فعال سرمایہ کار ہے، جس نے پاکستان میں ایئر لفٹ، تاجیر ​​اور سیف پے کو فنڈ فراہم کیا ہے۔

فاطمہ گروپ کے ڈائریکٹر علی مختار نے کہاکہ زراعت میں ڈیجیٹل اسٹیٹ بینک کا کلیدی ایجنڈا ہے۔ فاطمہ گروپ اپنی گہری زرعی کاروبار کی جڑوں کے ساتھ اور کودا کا تکنیکی حل زرعی بینکنگ کے حل میں آسانی فراہم کرکے ملک کے لئے ایک انقلاب لائے گا۔ سٹی سکولز گروپ 700 سکولوں میں اپنے 200,000 طلباء کو اعلیٰ معیار کی تعلیم فراہم کرنے میں اپنے 40 سالہ تجربے کی بنیاد پر تعلیمی شمولیت میں خود کو ایک رہنما کے طور پر کھڑا کيا ہے۔

سٹی سکولز گروپ کے ڈائریکٹر اورنگزیب فیروز نے کہا کہ ایک ترقی پذیر ملک کے طور پر پاکستان کے لئے معیاری تعلیم بنیادی ترجیح ہے، ہم کودا کے ساتھ شراکت داری میں ایک مربوط بینکنگ کے تجربے اور تعلیمی مالیاتی حل کے ذریعے والدین، اساتذہ اور طلباء کے لیے سہولت اور ذہنی سکون فراہم کرنا چاہتے ہیں۔کودا ٹیکنالوجیز کی تکنیکی طاقتوں پر زور دیتے ہوئے کودا کے ریان لابشر نے کہا کہ کمپنی کی ترجیح سستی بینکنگ فراہم کرنا اور پاکستان میں اپنے شراکت داروں کی شمولیت پر مرکوز اقدامات کی پیمائش کرنا ہے۔

فاطمہ گروپ اور دی سٹی سکولز گروپ نے اپنے موجودہ اقدامات کے ذریعے دنیا کو دکھایا ہے کہ جب شمولیت کو سنجیدگی سے لیا جائے تو حاصل کیا جا سکتا ہے۔ کودا کی اپنی مرضی کے مطابق ٹیکنالوجی کے ساتھ ہم پاکستان بھر میں زیادہ سے زیادہ لوگوں کو بہتر مالی مواقع تک رسائی دینے کے لئے ان اقدامات کی پیمائش کے قابل ہو جائیں گے۔ کنسورشیم کے اراکین نے حال ہی میں ایک معاہدے پر دستخط کئے ہیں۔ اس موقع پر کودا کے گروپ کے چیف ایکسپینشن آفیسرریان لابشر ، ڈائریکٹر فاطمہ گروپ علی مختار ، ڈائریکٹر سٹی سکولز گروپاورنگزیب فیروز اور سی ای او توران آصف بھی موجود تھے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

scroll to top