موجودہ وقت میں سوشل ورک کی اہمیت سے کوئی انکار نہیں کرسکتا،ڈاکٹر محمد آصف

88098185_2772849602790667_7022092982874537984_n.jpg

سیدرسول بیٹنی

پشاور: وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر محمد آصف خان نے کہا ہے کہ سوشل ورک دنیا کے تمام علوم کو انسانی ترقی ، سماجی انصاف اور فلاحی امداد کیلئے بروئے کار لاتا ہے جس سے انسانی تمدن و تجربات ایک دوسرے سے ہم آہنگ ہوتے ہیں۔
ان خیالات کا اظہار انہوں  نے جامعہ پشاور میں تین روزہ بین الاقوامی سوشل ورک کانفرنس  کے افتتاحی تقریب کے دوران کیا۔
انھوں نے اس موقع پر انٹرنیشنل فیڈریشن آف سوشل ورکرز کے سیکرٹری جنرل روری جی ٹروئل کی آمد کو خوش آئند قرار دیا اور کہا کہ جامعہ پشاور کے دروازے علمی تعاون کیلئے ہمیشہ کھلے ہیں اور اب ملکی سیکورٹی صورتحال بہتر ہونے پر ان جیسی کانفرنس منعقد ہو سکیں گی۔
 عالمی کانفرنس جامعہ پشاور کے شعبہ سوشل ورک اور فلاحی ادارے “کمیونٹی ورلڈ سروس” کے مشترکہ کاوشوں سے ترتیب دیا گیا تھا جس  میں ملکی اور بین الاقوامی سکالرز اور کثیر تعداد  میں طلباء وطالبات نے شرکت کی۔

کانفرنس کے مرکزی میزبان شعبہ سوشل ورک ڈاکٹر شکیل احمد نے افتتاحی تقریر کے دوران مندوبین پر زور دیا کہ مثبت سماجی رویوں کو سماجی تبدیلی میں بدلنا ایک چیلنج ہے جس کیلئے وہ ہم تن تیار ہیں اس موقع پر انھوں نے کانفرنس کے آرگنائزر ڈاکٹر محمد ابرار خان کی کوششوں کی ستائش کرتے ہوئے کہا ہے کہ ڈاکٹر ابرار کی کوششوں سے کانفرنس کے انعقاد کو ممکن بنایا گیا ہے۔

کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے  جارج ٹاؤن یونیورسٹی کے پروفیسر و بین الاقوامی تعلقات کے سربراہ مائیکل برنٹ نے کہا کہ موجودہ صدی کی ترقی گزشتہ دو صدیوں کی سوشل ورک کی مرہون منت ہے کیونکہ انسداد غلامی کی تحریک سے لے کر آئی ای آر سی کا قیام سوشل ورکرز کی مرہون منت ہے۔

انھون نے مقامی و بین الاقوامی تنظیموں کو غیر سیاسی وابستگی برقرار رکھنا پر زور دیا۔ مائیکل برنٹ نے مزید کہا کہ موجودہ امریکی صدر کی امیگریشن مخالف سرگرمیوں نے سوشل ورکرز اور کمیونٹی ورکرز کو ایک پلیٹ فارم پر لاکھڑا کیا ہے جس سے مثبت تبدیلیوں کا امکان ہے۔

اس موقع پر افتتاحی نشست کے صدر اور پرو وائس پروفیسر جوہر علی نے کہا کہ موجودہ سوشل ورک ڈیپارٹمنٹ کی ترقی میں پروفیسر کرم الہی ، پروفیسر سارہ صفدر اور پروفیسر سید سجاد حسین شاہ کی علمی کاوشوں کا نتیجہ ہے۔

انھوں نے سوشل ویلفئر ڈیپارٹمنٹ میں سوشل ورک کی حامل تعلیمی پس منظر رکھنے والی شخصیات کا نہ ہونہ کا سماجی ترقی اورانصاف پر پڑنے والے منفی اثرات پر افسوس کا اظہار کیا ۔

کانفرنس کے ابتدائی سیشنز سے دیگر خطاب کرنے والی مہمان شخصیات میں پروفیسر سارہ صفدر ، شعبہ جرمیات پروفیسر بشارت حسین شانل تھے اس موقع پر دیگر اہم شرکاء میں رنرا یونیورسٹی کابل سے وائس چانسلر ارشد خان ،یو این وومن سے زینب قیصر خان ، معروف سماجی کارکن جہانزیب خان اور اسلامک ریلیف سے حسین علی اعوان نے خصوصی طور پر شرکت کی۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

scroll to top