صوبائی حکومت صحافیوں کی جبری برطرفیوں کے خلاف ہے،اجمل وزیر

9d2b6626-aa7b-4f21-bf8d-1e1a56f4bde3.jpg

پشاور : وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا کے ترجمان اور مشیر برائے قبائلی اضلاع اجمل وزیر نے کہا ہے کہ صحافی ساتھیوں کے مسائل کے حل کیلئے ہر ممکن اقدام اٹھائیں گے صحافیوں کی جبری برطرفیوں کے معاملے پر حکومت سنجیدگی سے کام کر رہی ہے صحافیوں کی رہائشی کالونی پر تیزی سے کام جاری ہے جبکہ پلاٹوں سے محروم صحافی بھائیوں کو بھی جلد خوشخبری سنائیں گے۔

ان خیالات کااظہارانہوں نے پشاور پر یس کلب میںخیبریونین آف جرنلسٹس کے پروگرام ”میٹ دی پریس”اظہا ر خیال کر تے ہو ئے کیا اس موقع پر خیبریونین آف جرنلسٹس کے صدر فداخٹک،پر یس کلب کے صدر سید بخار شاہ باچا،جنر ل سیکر ٹر ی ظفر اقبال اور کے ایچ یو جے کے جنر ل سیکر ٹر ی محمد نعیم بھی موجو د تھے۔

اجمل وزیر نے کہا کہ قبائلی اضلاع کے انتخابات کو فری اینڈ فیئر بنائیں گے، امن و امان کے حوالے سے قبائلی علاقوں میں صورتحال بہترین ہے 20 تاریخ کو جو بھی جیتے اسے قبائلی عوام کی نمائندگی کا حق دینگے، قبائلی اضلاع کے عوام کو پہلی بار کسی نے اونرشپ دی ہے جبکہ 162 ارب روپے قبائلی اضلاع کی محرومیوں کے خاتمے کیلئے مختص کئے ستر سال سے محروم قبائلی عوام کو انصاف فراہم کرنا عمران خان کی ترجیحات میں شامل ہے۔

اجمل وزیر کا کہنا تھا کہ  قبائلی اضلا ع میں پولنگ اسٹیشنزکے اندر سکیورٹی فورسز کے نمائندوں کی تعیناتی کا فیصلہ الیکشن کا اختیار ہے۔انہوں نے کہاکہ فاٹا انضمام سے سیکر ٹریٹ ختم ہوا جو کہ ایک علامتی سٹیس کو تھی اب ملازمین کی مشکلا ت آسانی سے حل ہو جا ئینگے۔

انہوں نے کہاکہ پی ٹی آ ئی کی وجہ سے قبائلی عوا م سے ایف سی آر جیسے کالے کا خاتمہ ہوا ہے اب عوا م اپنی زندگی آسانی کے ساتھ بسرکررہی ہیں۔انہوں نے کہاکہ پی ٹی آئی کی حکومت نے قبائلی اضلاع میں صحت کارڈز بھی تقسیم کئے گئے جس میں سا لانہ ساتھ لا کھ بیس ہزار رو پے علاج کیلئے مختص کئے گئے ہیں ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

scroll to top