جامعات وسائل کو برقرار رکھتےہوئے معیاری تعلیم فراہم کریں،گورنر شاہ فرمان

gv-e1551975845393.jpg

اقبال مھمند

پشاور:گورنرخیبرپختونخوا شاہ فرمان نے کہا ہے کہ جامعات اعلیٰ تعلیم کو پروان چڑھائے اور طلباء میں تخلیقی طرز فکر پیدا کریں، حکومت ہر ممکن  مالی تعاون فراہم کریں گے۔

ان خیالات کا اظہار گورنر شاہ فرمان نے گورنرہاؤس پشاور میں منعقد یونیورسٹی آف پشاور کی سینیٹ اجلاس کے صدارت کرتے ہوئے کہی۔ اجلاس میں گورنر کے علاوہ رکن صوبائی اسمبلی پیرفدامحمد ، پرنسپل سیکرٹری برائے گورنرنظام الدین، سیکرٹری ہائیر ایجوکیشن منظور احمد ، سیکرٹری خزانہ، پشاوریونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹرمحمدآصف خان اوردیگرمتعلقہ اراکین و نمائندگان نے شرکت کی۔

گورنرخیبرپختونخوا شاہ فرمان نے اعلی تعلیمی اداروں کو ہدایت کی ہے کہ وہ تعلیمی معیار اور مالی نظم وضبط برقراررکھتے ہوئے اپنی سمت درست رکھیں اورغریب طلباء کو زیادہ سے زیادہ مستفید کیاجائے۔

اس موقع پر جامعہ پشاور کے نمائندگان نے گورنر کو بتایا کہ جامعہ پشاور صوبے کی 27 جامعات میں 3 جامعات میں ہے جن کا بجٹ اخراجات سے قبل پہلے ہی سے منظور کیا گیا جس کا آڈٹ بھی مکمل ہے جبکہ جامعہ پشاور نے امسال تیس کروڈ روپے بھی اپنی مدد آپ کے تحت جنریٹ کئے ۔

اس موقع پر جامعہ پشاور کا مالی سال ۲۰۱۸-۱۹ کا بجٹ بھی منظور کر لیا گیا گورنرنے یونیورسٹی ملازمین کی گریڈ 17 اور اوپر کے مالی مراعات کے حوالے سے رپورٹ تیارکرنے کی بھی ہدایت کی جبکہ یونیورسٹی سٹیچیوٹس کاجائزہ لینے کیلئے ایک کمیٹی قائم کی جو دو ہفتے کے اندر اپنی رپورٹ پیش کرے گی۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

scroll to top